دیوالا[2]

( دِیوالا[2] )
{ دی + وا + لا }
( فارسی )

تفصیلات


اسم جامد ہے اردو میں ١٨٨٣ء کو "جغرافیہ گیتی" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم نکرہ ( مذکر - واحد )
واحد غیر ندائی   : دِیوالے [دی + وا + لے]
جمع   : دِیوالے [دی + وا + لے]
جمع غیر ندائی   : دِیوالوں [دی + وا + لوں]
١ - عبادت گاہ۔
"جب وہ دیوالا کو جا رہے تھے تو آکاش بانی سنائی دی"۔      ( ١٩٣٨ء، شکنتلا (ترجمہ)، ١٠١ )
  • 'Residence of the gods'
  • a division of heaven;  an idol temple
  • a pagoda