تشبک

( تَشَبُّک )
{ تَشَب + بُک }
( عربی )

تفصیلات


شبک  تَشَبُّک

عربی زبان میں ثلاثی مجرد کے باب سے مشتاق اسم ہے اردو میں اصل معنی اور حالت میں بطور اسم مستعمل ہے ١٨٣٤ء میں "دیوان شاہ نیاز" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم کیفیت ( مذکر - واحد )
١ - بہت زیادہ سوراخ دار ہونا، چھلنی جیسا ہونا، کسی چیز کی چھلنی نما یا جالی نما نظر آنے کی کیفیت۔
 فخر اپنے تشبک کا فلک چاہے سو کرلے پر شرط نہ غربال دل چاک سے باندھے      ( ١٨٣٤ء، دیوان شاہ نیاز ٢٢٧ )