منقطع وحدانی

( مُنْقَطِعِ وَحْدانی )
{ مُن + قَطِعے (کسرہ ط مجہول) + وَح + دا + نی }
( عربی )

تفصیلات


اسم نکرہ
١ - (تصوف) مراد اس سے حضرت الجمع ہے کہ اس میں کسی غیر کا دخل نہیں کیونکہ وہ محل انقطاع ہے اور وہی عین الجمع ہے اور اسی کو نقطع الاشارہ اور حضرت الوجود بھی کہتے ہیں۔